490

نیند کی کمی سے دماغی بیماریاں لاحق ہونے کاخطرہ

ہالینڈ کے سائنسدانوں کا کہناہے کہ نیند میں کمی کے نتیجے میں دماغی بیماریاں لاحق ہونے کاخطرہ بڑھ جاتا ہے، نیند پوری نہ ہونے سے انسان کسی کام پر بھرپور توجہ نہیں دے سکتا اور آج کے 75فیصد بچے اور بالغ افراد اس مسئلے سے دوچار ہیں، تصور کیا جاتا تھا کہ تاخیر سے سونے کے نتیجے میں انسان خود کو ترو تازہ نہیں سمجھتا لیکن اب نیند کی کمی پر جو تجربات ہوئے ہیں اس کے نتیجے میں سائنسدانوں کاکہناہے کہ اس دن انسان کا پورا پروگرام ہی تلپٹ رہتا ہے، ہالینڈ میں وی یو یونیورسٹی میڈیکل سینٹر سے وابستہ پروفیسر سندر کوجی نے کہا کہ اس سلسلے میں بڑی وسیع تحقیق ہوئی ہے،جس کی رپورٹ پیرس میں ہونے والی ای کانفرنس میں پیش کی گئی ،کم نیند کی وجہ سے رات اور دن کا انسان کا نظام متاثر ہوتا ہے، جسمانی طور پر جو تبدیلیاں ہوتی ہیں وہ اس کے علاوہ ہیں، نیند نہ ہونے کی وجہ سے انسان کے کام کرنے کا انداز بھی تبدیل ہوتاہے جبکہ کھانے پینے کے اوقات بھی بدلتے ہیں، اسکے علاوہ نفسیاتی اور دماغی بیماریاں بھی لاحق ہوسکتی ہیں، بھرپور نیند لینے کے نتیجے میں انسان میں جو ہارمون پیدا ہوتے ہیں وہ بھی متاثر ہوتے ہیں، ایسے بے شمار لوگ جو نیند سے متاثر ہوتے ہیں شام اور صبح کو برائٹ لائٹ تھراپی کراتے ہیں جس سے انکے جسمانی نظام الاوقات کو بہتر بنانے میں مدد ملتی ہے۔

Comments

comments

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں